Add to favourites
News Local and Global in your language
22nd of October 2018

International



خواجہ سراؤں کو سپریم کورٹ میں ملازمت دینے پر غور

پاکستان کے چیف جسٹس میاں ثاقب نثار نے خواجہ سراؤں سے متعلق مقدمے کی سماعت کے دوران ریمارکس دیتے ہوئے کہا کہ دو خواجہ سراؤں کو سپریم کورٹ میں ملازمتیں دینے کے بارے میں سوچ بچار کی جا رہی ہے۔

چیف جسٹس ثاقب نثار نے کہا کہ اس اقدام کا مقصد خواجہ سراؤں کو قومی دھارے میں لانا ہے۔

سماعت کے دوران عدالت نے یہ واضح نہیں کیا کہ ان دو خواجہ سراؤں کو کس شعبے میں نوکریاں دی جائیں گی اور قابلیت کے معیار کے بارے میں بھی کچھ نہیں بتایا گیا۔

یہ بھی پڑھیے!

’مجھے ہم جنس پرست ہونے کی وجہ سے قید ہوئی‘

’قدرت کے فیصلے اور قانون کو تسلیم کریں‘

’جو خواب دیکھا تھا اس کی پہلی سیڑھی چڑھ گئی ہوں‘

چیف جسٹس ثاقب نثار کی سر براہی میں سپریم کورٹ کی تین رکنی بنچ نے خواجہ سراﺅں کے حقوق سے متعلق مقدمے کی سماعت کے دوران ریمارکس دیتے ہوئے کہا کہ ہمارے معاشرے میں خواجہ سراؤں کی تضحیک کی جاتی ہے۔

اُنھوں نے کہا کہ ملک بھر اور بالخصوص خیبرپختونخوا میں نہ صرف خواجہ سراؤں کی تذلیل کی جاتی ہے بلکہ انھیں جان لیوا دھمکیوں کا سامنا بھی کرنا پڑتا ہے۔ اس طرح کے واقعات بدنامی کا سبب بنتے ہیں۔

نامہ نگار شہزاد ملک کے مطابق عدالت کو بتایا گیا کہ صوبہ خیبر پختونخوا میں دو خواجہ سراؤں کو قتل بھی کیا جاچکا ہے جس پر بینچ کے سربراہ نے ریمارکس دیتے ہوئے کہا کہ عدالت خواجہ سراؤں کی حفاظت اور ان کو درپیش مسائل کا حل چاہتی ہے۔

سماعت کے دوران چیف جسٹس پاکستان نے استفسار کیا کہ کیا تمام درخواست گزاروں کے شناختی کارڈ جاری ہو گئے ہیں؟ جس پر نیشنل ڈیٹا بیس رجسٹریشن اتھارٹی یعنی نادرا کے چیئرمین نے عدالت کو بتایا کہ 342 خواجہ سراؤں کو شناختی کارڈ جاری کر رہے ہیں جبکہ دیگر خواجہ سراؤں کی رجسٹریشن کے لیے بھی کام جاری ہے۔

بینچ کے سربراہ نے نادرا کے سربراہ کو مخاطب کرتے ہوئے کہا کہ اس ضمن میں محض کارروائیاں نہیں ہونی چاہییں۔

سماعت کے دوران عدالت کو بتایا گیا کہ ایک غیر سرکاری تنظیم نے خواجہ سراؤں کے خلاف ایک مہم چلا رکھی ہے جہاں پر اُن کی تذلیل کی جاتی ہے جس پر چیف جسٹس نے ریمارکس دیے کہ یہ عمل قابل قبول نہیں ہے۔

بینچ کے سربراہ نے استفسار کیا کہ کون سی این جی او ہے جو پیج بناکر بدنام کررہی ہے جس پر عدالت نے اس این جی او کے مالک نسیم قمر کو نوٹس جاری کر دیا ہے۔

خواجہ سراؤں کے حقوق سے متعلق عدالت نے سندھ، خیبرپختونخوا اور وفاق سے سفارشات دو ہفتے میں طلب کرتے ہوئے اس مقدمے کی سماعت دو ہفتے کے لیے ملتوی کر دی۔

Read More




Leave A Comment

More News

BBCUrdu.com | صفحۂ

دنیا - وائس آف

The News International -

AAJ News

AL JAZEERA ENGLISH (AJE)

The Dawn News - Home

China Post Online -

Reuters: World News

FOX News

Asian Correspondent

Disclaimer and Notice:WorldProNews.com is not the owner of these news or any information published on this site.